نیرج چوپڑا کا اپنے ہی میڈیا کو کرارا جواب

نیرج چوپڑا نے بھارتی الزام تراشیوں کو غلط قرار دیتے ہوئے ارشد ندیم کے حق میں بیان دے دیا۔

بھارتی میڈیا کو دیئے گئے انٹرویو میں ٹوکیو اولمپکس میں گولڈ میڈل جیتے والے نیرج چوپڑا نے کہا کہ فائنل میں ارشد ندیم نے میرا جیولن لیا وہ کوئی بڑی بات نہیں ہے، میری بات کو توڑ مروڑ کر غلط انداز میں پیش کیا جا رہا ہے۔

نیرج چوپڑا کا کہنا تھا کہ تمام جیولن تھرور آپس میں بہت پیار سے رہتے ہیں، اسپورٹس سب کو مل کر رہنا سکھاتا ہے، میں اپیل کرتا ہوں کہ اس معاملے کو اتنا مت اچھالیں۔

اپنے انٹرویو میں نیرج چوپڑا نے اس بات کی بھی تصدیق کی کہ طلائی تمغہ جیتنے کے اگلے روز اختتامی تقریب سے پہلے ڈائننگ ہال میں ارشد ندیم سے ملاقات کی تھی، ہم دونوں نے بہت گرمجوشی سے ملاقات کی، اس موقع پر ارشد ندیم نے ایک بڑی مسکراہٹ کے ساتھ مجھے مبارکباد دی تھی۔

واضح رہے کہ اپنے وطن واپسی پر ایک انٹرویو میں نیرج نے کہا تھا کہ اگر پوڈیم پر ان کے ساتھ پاکستان کے ارشد ندیم بھی ہوتے تو ’ایشیا کا نام ہو جاتا اور یہ کتنا اچھا ہوتا‘، نیرج کے اس بیان پر بھی بھارتی میڈیا نے واویلا کیا تھا۔

یاد رہے کہ ارشد ندیم نے ٹوکیو اولمپکس کے کوالیفائنگ مقابلوں میں 85 اعشاریہ 16 میٹرز دور جیولن پھینک کر فائنل راؤنڈ کے لیے کوالیفائی کیا تھا، وہ کوالیفائنگ مقابلوں میں گروپ بی میں پہلے نمبر پر رہے تھے جبکہ مجموعی طور پر کوالیفائنگ راؤنڈ میں ان کی تیسری پوزیشن رہی تھی۔

ارشد ندیم نے اپنی پہلی تھرو 82 اعشاریہ چار میٹر دور پھینکی، ان کی دوسری تھرو فاؤل قرار پائی جبکہ ان کی تیسری تھرو 84 اعشاریہ چھ دو میٹر دور پہنچی۔ اس تیسری تھرو کے باعث وہ 12 ایتھلیٹس میں سے پانچویں نمبر پر رہے۔

ارشد ندیم کی اس سال کی بہترین کارکردگی 86 اعشاریہ 38 میٹرز تھی جو انہوں نے ایران کے شہر مشہد میں منعقدہ مقابلے میں دکھائی تھی۔

Comments






#نیرج #چوپڑا #کا #اپنے #ہی #میڈیا #کو #کرارا #جواب

اپنا تبصرہ بھیجیں