کراچی لاک ڈاؤن کے خلاف تاجروں کا بھوک ہڑتال کا اعلان –

کراچی: تاجروں کی نمائندہ تنظیم تاجر ایکشن کمیٹی نے لاک ڈاؤن کے خلاف بھوک ہڑتال کا اعلان کردیا۔

تاجر ایکشن کمیٹی کے رہنما شرجیل گوپلانی نے کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لاک ڈاؤن کے خلاف دو ستمبر کو بھوک ہڑتال کی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے جاری اعداد و شمار میں بتایا گیا کہ ضلع جنوبی میں 84 فیصد ویکسی نیشن ہوچکی ہے، اُس کے باوجود حکومت نے متعصبانہ فیصلہ کیا۔

رضوان عرفان نے کہا کہ کراچی تاجر ایکشن کمیٹی ایم اےجناح روڈ پر بھوک ہڑتال کرے گی۔

تاجر رہنماؤں نے حکومت سندھ سے رات دس بجے تک کاروبار کی اجازت دینے اور اندرون سندھ کی طرح کراچی میں بھی ایک دن تجارتی و کاروباری مراکز بند رکھنے کا مطالبہ کیا۔

ریسٹورنٹس ایسو سی ایشن کے رہنما وقاص عظیم نے کہا کہ حکومت سندھ ہوٹلوں میں ان ڈور ڈائننگ کی اجازت دے جبکہ شادی ہالز ایسوسی ایشن کے چیئرمین رانا رئیس نے ان ڈور شادیوں کی اجازت دینے کا مطالبہ بھی کیا۔

مزید پڑھیں: سندھ میں تجارتی سرگرمیوں اور ریستورانوں کے حوالے سے نیا حکم نامہ جاری

واضح رہے کہ 29 اگست کو کرونا ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا، جس میں حیدرآباد اور کراچی کی صورت حال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے پابندیاں مزید سخت کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

محکمہ داخلہ سندھ نے کرونا وائرس ایس او پیز سے متعلق نیا حکم نامہ جاری کیا، جس کے مطابق کراچی اور حیدر آباد میں تجارتی سرگرمیاں رات 8 بجے تک جاری رکھنے کی اجازت دی گئی جبکہ صوبے کے دیگر اضلاع میں مارکیٹ اور کاروبار رات 10 بجے تک کھلا رکھنے کی اجازت دی گئی۔

نوٹی فکیشن میں بتایا تھا کہ بنیادی اشیائے ضروریہ، ادویات اور ویکسی نیشن سینٹرز 24 گھنٹے کھلے رہیں گے۔  صوبے بھر کے سی این جی اسٹیشنز ہفتے کے ساتوں روز 24 گھنٹے کھلے رہیں گے۔ کراچی میں جمعہ اور اتوار کو کاروبار مکمل بند رہے گا جبکہ حیدر آباد میں کاروبار جمعہ اور ہفتے کے روز بند رہے گا۔

Comments






#کراچی #لاک #ڈاؤن #کے #خلاف #تاجروں #کا #بھوک #ہڑتال #کا #اعلان

اپنا تبصرہ بھیجیں